بسم الله الرحمن الرحيم

اَلْحَمْدُ لِله رَبِّ الْعَالَمِيْن،وَالصَّلاۃ وَالسَّلام عَلَی النَّبِیِّ الْکَرِيم وَعَلیٰ آله وَاَصْحَابه اَجْمَعِيْن۔

اذان، وضو اور مسواک کے فضائل کا مختصر بیان

اذان:
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: قیامت کے دن‘ اذان دینے والے سب سے زیادہ لمبی گردن والے ہوں گے یعنی سب سے ممتازنظر آئیں گے۔۔۔۔۔۔ مسلم ۔ باب فضل الاذان
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مؤذن کی آواز جہاں جہاں تک پہنچتی ہے وہاں تک اس کی مغفرت کردی جاتی ہے۔ ہر جاندار اور بے جان جو اُس کی آواز کو سنتے ہیں، اُس کے لئے مغفرت کی دعا کرتے ہیں۔۔۔۔۔ مسند احمد
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مؤذن کی آواز کو جو درخت، مٹی کے ڈھیلے، پتھر، جن اور انس سنتے ہیں وہ سب قیامت کےدن مؤذن کے لئے گواہی دیں گے۔۔۔۔۔۔۔ ابن خزیمہ
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جس نے بارہ سال اذان دی اس کے لئے جنت واجب ہوگئی (ان شاء اللہ) ۔۔۔ حاکم
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: اذان دینے والوں کو قیامت کی سخت گھبراہٹ کا خوف نہیں ہوگا اور نہ ہی ان کو حساب دینا ہوگا،بلکہ وہ مشک کے ٹیلے پر تفریح کریں گے۔ ۔۔۔۔۔۔۔ ترمذی ، طبرانی، مجمع الزوائد ۔ باب فضل الاذان
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جو شخص اذان سننے کے بعد اذان کے بعد کی دعا پڑھے تو اس کے لئے قیامت کے دن نبی اکرم ﷺ کی شفاعت واجب ہوگئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بخاری ۔ باب الدعاء عند النداء
وضو:
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جس نے اچھی طرح وضو کیا یعنی سنتوں اور آداب ومستحبات کا اہتمام کیا تو اس کے (چھوٹے) گناہجسم سے نکل جاتے ہیں، یہاں تک کہ اس کے ناخنوں کے نیچے سے بھی نکل جاتے ہیں۔ مسلم
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جب مؤمن بندہ وضو کرتا ہے اور اس دوران کلی کرتا ہے تو اسکے منہ کے تمام (چھوٹے) گناہ دھلجاتے ہیں۔ جب وہ ناک صاف کرتا ہے تو ناک کے تمام (چھوٹے) گناہ دھل جاتے ہیں۔ جب چہرا دھوتا ہے تو چہرے کے تمام)چھوٹے) گناہ دھل جاتے ہیں یہاں تک کہ پلکوں کی جڑوں سے بھی نکل جاتے ہیں۔۔۔ نسائی ۔ باب مسح الاذنین مع الراس
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: میری اُمت قیامت کے دن اس حال میں بلائی جائے گی کہ ان کے ہاتھ پاؤں اور چہرے وضو میں
دھلنے کی وجہ سے روشن اور چمکدار ہوں گے۔۔۔۔۔۔ بخاری ۔ باب فضل الوضو
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مؤمن کا زیور قیامت کے دن وہاں تک پہنچے گا جہاں تک وضو کا پانی پہنچتا ہے یعنی اعضاء کے جنحصوں تک وضو کا پانی پہنچے گا وہاں تک زیور پہنایا جائے گا۔ ۔۔۔ مسلم ۔ باب تبلغ الحلیہ

رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جو شخص مستحبات اور آداب کا اہتمام کرتے ہوئے اچھی طرح وضو کرے پھر یہ پڑھے (اَشْھَدُ اَن
لاَّ اِلٰہَ الِاَّ اللّٰہُ وَحْدَہ لَا شَرِےْکَ لَہ وَاَشْھَدُ اَنّ مُحَمَّداً عَبْدُہ وَرَسُولُہ، اَللّٰھُمَّ اجْعَلْنِی مِنَ التَّوَّابِےْنَ وَاجْعَلْنِی مِنَ
الْمُتَطَھِّرِےْنَ) تو اس کے لئے جنت کے آٹھوں دروازے کھل جاتے ہیں جس سے چاہے داخل ہوجائے۔ ۔۔۔ ۔۔۔۔۔
مسلم۔ الذکر المستحب عقب الوضو
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جو شخص وضو ہونے کے باوجود دوبارہ وضو کرتا ہے تو اسے دس نیکیاں ملتی ہیں۔۔۔ ابو داؤد۔
باب الرجل یجدد الوضو (وضاحت: اس کی شکل یہ ہے کہ مثلاً وضو کرکے مغرب کی نماز مغرب کے وقت میں ادا کرلی، اب عشاء کی نماز
عشاء کے وقت میں ادا کرنی ہے تو بہتر ہے کہ دوسرا وضو کرلیں خواہ پہلا وضو ابھی باقی ہو)۔
مسواک:
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مسواک کرنا تمام انبیاء کی سنت ہے۔ ترمذی ۔ باب ماجاء فی فضل الترویجً ...
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مسواک منہ کو صاف کرنے والی اور اللہ تعالیٰ کی خوشنودی کا ذریعہ ہے۔۔۔ نسائی۔ الترغیب فی السواک
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: مسواک کرکے دو رکعت نماز پڑھنا بغیر مسواک کے ستر رکعت پڑھنے سے افضل ہے۔البزاز، مجمع الزوائد۔ باب ماجاء فی السواک
رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: دن یا رات میں جب بھی نبی اکرم ا سوکر اٹھتے تو وضو سے پہلے مسواک ضرور کرتے۔۔۔ابو داؤد ۔ باب السواک لمن قام باللیل
رسول اللہ ﷺ جب تہجد کے لئے اٹھتے تو مسواک سے اپنے منہ کو اچھی طرح صاف کرتے۔ ۔۔۔ رسول اللہ گھر میںتشریف لانے کے بعد سب سے پہلے مسواک کیا کرتے تھے۔ مسلم ۔ باب السواک
یا اللہ! ہم سب کو قرآن وحدیث کے مطابق زندگی گزانے والا بنا۔ یا اللہ! ہمارا خاتمہ ایمان پر فرما۔ محمد نجیب قاسمی سنبھلی، ریاض